انگور کھانے کے فوائد

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: پھل اور صحت


امرود مشہور پھل ہے جو ہند وپاکستان میں سب سے زیادہ پیدا ہوتا ہے اور سب سے زیادہ رغبت سے کھایا جاتا ہے اسے انگریزی میں Guava کے نام سے پکارا جاتا ہے اس کے مزاج کے بارے میں حکما متفق نہیں ہیں مگر عام لوگ اس کو سرد اور تر مزاج کا حامل مانتے ہیں۔اس کی کئی اقسام ہیں مگر الہ آبادی امرود سب سے زیادہ مشہور اور پسندیدہ ہیں۔امرود میں سفید رنگت والا اور سیب کی مانند آدھا آدھا سفید یا آدھا سرخ یا آدھا گلابی امرود زیادہ پر لطف اور خوشبو دار ہوتا ہے۔اس کی اقسام سخت،نرم ،لمبوترا اور گول امرود سب سے زیادہ مشہور ہیں۔

اجزاء

گلوکوز-فولاد اور وٹامن اس کے خصوصی اجزاء ہیں۔

حدِ استعمال

اسے ایک چھٹانک تک نمک اور لیموں کے ہمراہ کھانا مناسب کھانے کے بعد اس کا استعمال بہتر ہے ۔

خصوصیت وعلاج

امرود خوراک کے ہضم کر کے معدہ اور دل کو طاقت دیتا ہے اور امراضِ قلب میں امرود کھانا بہتر ہے اس سے طبیعت کو تسکین ملتی ہے۔

امرود قبض کرتا ہے تو کھولتا بھی ہے پہلے تو اجابت یا فراغت ہوتی ہے اور اس کے بعد یہ قبض کی سی کیفیت پیدا کر دیتا ہے۔اس لئے اسے کھانے کے بعد استعمال کرنا مناسب ہے اور اس طرح قبض پیدا نہیں ہوا کرتی ہے۔اسے کھانے سے پہلے کھانا نقصان دہ ہے۔کھانے کے بعد یا کھانے کے ساتھ اسے بطورِ سلاد استعمال کرنا زیادہ مناسب ہے۔

کھانسی اور نزلہ کے مریضوں کے لئے امرود بے حد فائدہ مند ہے اور اسے کھانسی و نزلہ کے دوران کھانے سے یہ امراض ختم ہو جاتے ہیں۔امرود پتلے خون کو گاڑھا کرتا ہے ۔پیٹ کےکیڑے ہلاک کر دیتا ہے ۔نکسیر کی زیادتی اور حیض کی تکلیف میں امرود اپنی مثال آپ ہے اور اسے بطورِدوا کھایا جا سکتا ہے۔بواسیر خونی کے لئے امرود بےحد مفید ہے۔

احتیاط

کچا امرود کھانے سے قبض پیدا ہوتی ہے ۔وہ شخص جنہیں رطوبت یا سرد مزاج ہے وہ اسے ہرگز نہ کھائیں اور ان کے لئے امرود مضر ہے۔کھانے سے پہلے اگر اسے کھایا جائے تو یہ قبض پیدا کرتا ہے،یہ سیاہ مرچ اور نمک کے ہمراہ کھانے سے نفع دیتا ہے۔اسے دھو کر اور چھیل کر کھانا بہترین عمل ہے۔

You May Also Like