آرٹیکل ڈائریکڑیز کی ایس ای او میں اہمیت

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: ویب ٹیکنالوجی

آرٹیکل ڈائریکڑیز وہ ویب سائٹس ہوتی ہیں جن پر مختلف catagoriesمیں آپ اپنا لکھا ہوا آرٹیکل شائع کر سکتے ہیں۔ یعنی کہ اگر آپ کا بلاگ یا ویب سائٹ صحت کے موضوع پر ہے تو آپ اس کے متعلق مختلف موضوعات پر آرٹیکل لکھ کر انہیں چند اچھی Article Directory پر شائع کر وا سکتے ہیں۔

آرٹیکل بھیجنے کے فوائد

1۔ لنک حاصل کرنا: چونکہ Article Directoriesپہلے سے establishویب سائیٹ ہوتی ہیں اور انکا پیج رینک کافی اچھا ہوتا ہے تو آپ کو فائدہ یہ ہو گا کہ آپ کے بلاگ یا ویب سائٹ کا لنک ان پر شائع ہو جائے گا۔یہ لنک آپ لازمی طور پراپنے author Resource باکس میں شامل کریں گے۔ اگر آپ کا آرٹیکل directories 200-100 پر چھپ جائے تو یقنیناً ایس ای او کے لحاظ سے آپکو بے پناہ فائدہ ہو گا۔

2۔ مفت ٹریفک کا حصول: Article Directoriesپر ہر قسم کے لوگ مختلف معلومات کی تلاش میں آتے ہیں اور اپنے پسندیدہ موضوع کے متعلق مختلف رائٹر ز کے خیالات پڑھتے ہیں۔ چونکہ ایک ایک موضوع پر انہیں ہزاروں مختلف لکھاریوں کے آرٹیکلز آسانی سے مل جاتے ہیں اس لیے ایسے لاکھوں لوگ Article Directories کا رخ کرتے ہیں۔

اگرکسی کو آپکا آرٹیکل اچھالگ جاتا ہے تووہ آپ کا ریسورس باکس بھی پڑھے گااور اگر آپ نے اسے درست اور اچھے طریقے سے بنایا ہو تو اس بات کا چانس بڑھ جاہے گا کہ وزیٹر آپ کے بلاگ یا siteکے لنک کو کلک کرکے اس پر مزید معلومات حاصل کرنے آجاہے۔

مفت ٹریفک حاصل کرنے کا دوسرا طریقہ یہ ہے کہ Article Directoriesپر تمام ویب ماسٹرز اور بلاگرز کو یہ سہولت بھی دی گئی ہوتی ہے کہ وہ چاہیں تو آپ کا آرٹیکل اپنے بلاگ یا ویب سائٹ پر شائع بھی کر سکتے ہیں۔ لیکن اس کے ساتھ شرط یہ ہوتی ہے کہ وہ آپ کا resource boxبھی اس آرٹیکل کے ساتھ ضرور شامل کریں گے۔

اس طرح اگر آپ کا آرٹیکل اس معیار کا ہو کہ دوسرے بلاگرز اس کو اپنے فارئین کے لیے اپنے بلاگ پر شائع کر دیں تو آپ کو Article Directoryکے علاوہ دیگر بالگ سے بھی ٹریفک ملنے کا قوی امکان ہوتا ہے۔

3۔ آپ کی شہرت: جی ہاں اگر آپ کسی مخصوص موضوع پر 30-20آرٹیکل لکھ کر انہیں بہت سے Article Directoriesپر شائع کر دیں تو لوگ آپ کو اس موضوع کا ماہر تصور کرنا شروع کر دیں گے اور آپ کی شہرت بڑھ جائےگی۔ نیٹ سر فر آپ کو اس مخصوص موضوع پر authorityماننا شروع کر دیں گے اور انہیں جب اس موضوع پر مزید تفصیلات درکار ہوں گی تو وہ آپ کے بلاگ کو وزٹ کرنےآ جائیں گے۔

آرٹیکل ڈائیریکٹری پر آرٹیکل بھیجنے کا طریقہ

آرٹیکل ڈائریکڑیز کو ویب ماسٹرز اس لیے پسند کرتے ہیں کہ یہ مفت ہوتی ہیں۔ یعنی کہ آپ ان پر مفت اکاؤنٹ بنا سکتے ہیں۔اور ان پر اپنا اکاؤنٹ بنانا شروع کر دیں۔ گوکہ کچھ کو یہ کام ذرا بوریت والا لگے گا تو اس کے لیے آپ دن میں 10-5آرٹیکل ڈائریکڑیز پر اکاؤنٹ بنانے کا ٹارگٹ رکھ لیں اور اس طرح ہفتہ، دس دن میں آپ دیکھیں گے کہ آپ کتنی زیادہ آرٹیکل ڈائریکڑیز کے ممبر بن گئے ہیں۔ ان کے login,passwordکے لیےExcel sheetاستعمال کر لیں تو بہتر ہوگا۔

آرٹیکل ڈائریکڑیز پر آرٹیکلsubmitکرنے کے لیے اچھے سے تقریباََ 500الفاظ پر مشتمل 10-5آرٹیکل لکھیں اور پھر انہیں روزانہ کی بنیادپر آرٹیکل ڈائریکڑیز 7-5پرsubmitکرنا شروع کردیں اگر آپ دلجمعی اور محنت سے یہ کام کریں گے تو تھوڑے عرصے میں ہی آپ کو اس کا بے پناہ فائدہ ہوگا۔

رائٹر رسورس باکس: تین سے چار لائینوں پر مشتمل وہ معلومات ہوتی ہے جو رائٹر اوراسکی ویب سائٹ کے متعلق ہوتی ہے۔ کسی بھی اچھے سے اچھے آرٹیکل کا فائدہ آپ کو اس وقت تک نہیں ہو سکتا جب تک آپ کا Author Resource Boxکا رآمد اور بہترین نہیں ہوگا۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ آپکا رسورس باکس ہی آرٹیکل پڑھنے والے اور آپ کے درمیان رابطے کا واحد ذریعہ ہے۔

لوگ آپکا آرٹیکل کیوں پڑھیں گے؟ اس کا سادہ سا جواب ہے کہ وہ اس موضوع کے متعلق معلومات حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ اب جس نے آپ کا آرٹیکل کسی Article Directoryپرپڑھا ہے وہ یقینا اس موضوع کے متعلق مزید بھی جاننا چاہے گا، تو اگر آپ کے Author Resource Boxمیں کوئی ایسی چیز نہیں جو اسے اپنی طرف متوجہ کرے تو کبھی بھی آپ کے لنک کو کلک کر کے آپ کی سائیٹ یا بلاگ پر نہیں آئے گا۔ بلکہ وہ Article Directoryکے ویب پیج کو تھوڑا نیچے کرکے اسی موضوع سے متعلق دوسرے رائیٹرز کے آرٹیکل پڑھنا شروع کر دے گا اور آپ ایک قیمتی وزیٹر سے محروم ہو جاہیں گے۔ تو اس کے لیے کیا کیا جائے؟

اس کے لیے آپ اپنے ریسورس باکس میں کچھ ایسی پُر کشش ترغیبات دیں کہ آپ کا آرٹیکل پڑھنے والا خود کو روک نہ پائے اور لنک کو کلک کر کے آپ کے بلاگ یا سائیٹ پر پہنچ جائے۔ اور وہ ترغیبات کیا ہو سکتی ہیں؟ وہ کوئی مفت ای بک، رپورٹ، ویڈیو یا فری ای کورس کی شکل میں کچھ بھی ہو سکتا ہے۔

اب ہم Resource Boxکی مثال دیکھتے ہیں۔ فرض کریں آپ نے ایک آرٹیکل weight lossکے بارے میں لکھا اورArticle Directoryپر پبلش کر دیا۔ اس کا ریسورس باکس آپ نے ایسا بنایا Author is a journalist and researcher, you can visit his blog ……….. for more information.

اب یہ ایک ناکارہ سا یا دوسرے لفظوں میں تھکا ہوا Resource Boxہے، وزیٹر ایک سیکنڈ میں اس کو پڑھ کر کہیں اور چلا جائے گا۔اب دوسرا دیکھیں۔


Share