پاکستان میں ایس ای او کا مستقبل

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: ویب ٹیکنالوجی

ایس ای او کے متعلق پڑھتے ہوئےآپ لوگوں کے ذہن میں یہ سوال ضرور پیداہوا ہوگا کہ پاکستان میں ایس سی او یعنی کہ سرچ انجن آپٹیمائزیشن کا مستقبل یااسکا وجود کیا ہو گا؟اس کا اندازہ ہم اس بات سے لگاتے ہیں کہ آج سے چند برس پہلےتک ایس ای او کا لفظ پاکستان میں صرف چند ویب ماسٹرزاوربلاگرزتک محدودتھا جو وہ صرف اپنی ذاتی سائٹ یا بلاگ کے لیے ہی اُسکے طریقوں کو استعمال میں لاتے تھے۔

لیکن وقت گزرنے کے ساتھ اب عام لوگوں میں بھی اُس کا شعور اُجاگر ہو نا شروع ہوگیاہےاور وہ بھی اُسکی اہمیت کو پہچاننے لگے ہیں۔

حال ہی میں موبائل کمپنیوں کو 3 جی اور 4 جی کے لائنسنسوں کے اجراء کی وجہ سے پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کی تعداد میں بے پناہ اضافہ ہو گیا ہے۔ اسکے علاوہ براڈ بینڈ استعمال کرنے والوں کی تعداد میں بھی روز بروز اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔ ایک اندازے کے مطابق اس وقت پاکستان میں انٹرنیٹ صارفین کی تعداد دو کروڑ پچاس لاکھ سے زیادہ ہے۔

اب یہ عدادوشماربہت حوصلہ افزاہیں۔ان سے اندازہ ہوتا ہےکہ خصوصاہماری نوجوان نسل اس کام میں کتنی ترقی کررہی ہے۔ اسکے علاوہ بڑے شہروں میں تو باقاعدہ انٹرنیٹ کمپنیاں معرض وجود میں آگئی ہیں جو کہ کامیاب ویب سائٹس اور بلاگ نیٹ ورکس کو چلارہی ہیں۔ میں نے چند آن لائن جابزکی سائٹس جیسے rozee.pk میں لفظ ایس سی او لکھ کر سرچ کیا تو بڑی خوشی ہوئ کہ اُن پر60۔70 جاب اس کے متعلق تھیں ۔یعنی کہ اتنی کمپنیوں کو ایس ای او جاننے والے سٹاف کی ضرورت تھی۔

یہ بات ظاہر کرتی ہے کہ صرف اپنے کام کے لیے ایس ای او جاننے کے علاوہ آپکو اس سے متعلق بے شمار ملازمتیں بھی مل سکتی ہیں ۔اور یہ ابھی آغاز ہے ،آپ دیکھیں گے کہ سال 6ماہ میں یہ ایک باعزت وائٹ کالر جاب کی حیثیت اختیار کر لے گی۔

اور مزے کی بات یہ ہے کہ اسکی کوئی ریگولر سرٹیفیکیشن بھی نہیں ہوتی۔ باہر کی ایک سائٹ ہے جو 80-90 ڈالر کے عوض سرٹیفیکیٹ دیتی ہے لیکن وہ کوئی تسلیم شدہ نہیں یعنی کہ وہ اُسکی مجاز نہیں ہوتی ۔اسکی سرٹیفیکیشن یا قابلیت اور تجربے کا ثبوت آپ کا اپنا بلاگ یا سائٹ ہو سکتی ہے،جس پر آپ نے ایس ای او کے تمام طریقے آزماۓ ہوں اور آپ دوسروں کو بتاسکیں کہ اگر میں اپنے لیے ایسا کر سکتاہوں تو معقول معاوضے کے عوض آپ کے لیے بھی کر دوں گا ۔

اسطرح آپ ایس ای او کے تمام طریقے آزماتے ہوئے اپنے بلاگ کو کامیاب کر لیتے ہیں تو اول آپ کو جاب کی ضرورت ہی نہیں ہو گی،کیونکہ آپ خود گھر بیٹھے اپنے وقت میں اچھی خاصی آمدنی حاصل کرنے کے قابل ہو جایئں گے اگر آپ ایک کامیاب ایس ای او ماہر بن جایئں تو پھر اگر آپ جاب بھی کرنا چاہیں تو آپ اپنی مرضی کی شرائط اور سیلری پر جاب کریں گے۔جی ہاں!ایسا ہوتا ہے،آزمودہ ہے۔

اُسکے علاوہ یورپین اور امریکن کمپنیاں اپنا ایس ای او کا کام ایشیاء کے ممالک میں بڑے پیمانے پرآوٹ سورس کر رہی ہیں۔اُس کی وجہ یہی ہے کہ یہاں پر اجرت کم ہے اور اُنہیں اس کام کے لیے ورکر بہت زیادہ مل جاتے ہیں۔انڈیا میں تو اُنہوں نے اپنے دفاتر بھی بنالیے ہیں۔اسی طرح پاکستان میں بھی ایسی لوکل کمپنیاں ہیں جن کو باہر کے ممالک کی کمپنیاں ایس ای او اور اس سے متعلقہ کام سونپ رہی ہیں ایسی کمپنیوں کو بھی یہ کام جاننے والے لوگوں کی ضرورت ہے۔

کراچی،لاہور اور اسلام آبادمیں یہ کام سیکھانے والے ادارے یعنی انسٹیٹیوٹ بھی معرض وجود میں آ گئےہیں،اسلیئے میں پورے وثوق سے اور 100 فیصد یقین سے یہ بات کہہ سکتا ہوں کہ مستقبل قریب میں ایس ای او جاننے والوں کی ڈیمانڈمیں بےپناہ اضافہ ہو جاۓگا۔اس لیئے آپ یقین رکھیں کہ یہ کام سیکھنے کے بعد آپ فائدہ میں رہیں گے اور یہ بات وقت جلد ثابت کر دے گا۔

In this post we have seen Future of SEO in Pakistan language as there are number of webmasters and bloggers who are more comfortable with Urdu language so we have created this post " Future of SEO in Pakistan" for them. Since SEO is a bit of technical nature and is the need of every blogger to get good ranking in the search engines so SEO in Urdu will be very helpful for them to learn SEO in Urdu and they can easily optimize their blogs and websites for search engines.


Share Future of SEO in Pakistan

Add Your Thoughts